> <

استاد اللہ دتہ کی وفات

استاد اللہ دتہ/ طبلہ نواز ٭29 فروری 1968ء کو پاکستان کے نامور طبلہ نواز استاد اللہ دتہ نے کراچی میں وفات پائی اور علی باغ کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہوئے۔ وہ 1908ء کے لگ بھگ سیالکوٹ کے ایک گائوں بہاری پور میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے والد رحیم بخش سارنگی نواز تھے۔ استاد اللہ دتہ نے کم عمری میں طبلہ بجانا شروع کردیا تھا ان کے اس شوق کو جلابخشنے میں ان کے استاد، استاد قادر بخش کا بڑا اہم کردار تھا۔ استاد اللہ دتہ نے طبلہ بجانے میں بڑے کمالات پیدا کئے۔ وہ جتنا اچھا طبلہ کسی کی سنگت میں بجاتے تھے اتنا ہی اچھا طبلہ اکیلی پرفارمنس میں بجاتے تھے وہ بیان، گت اور پرت سب میں یکساں اختصاص رکھتے تھے۔ انہیں طبلہ نوازی میں ان کے عبور کی وجہ سے ’’پری پیکر‘‘ کا خطاب دیا گیا تھا۔

UP