> <

اختر حسین اکھیاں کی وفات

اختر حسین اکھیاں ٭18 اگست 2003ء کو پاکستان کے نامور فلمی موسیقار اختر حسین اکھیاں، لاہور میں وفات پاگئے اور میانی صاحب کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہوئے۔ اختر حسین اکھیاں 1937ء میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے فلمی سفر کا آغاز 1955ء میں فلم ’’پاٹے خان‘‘ سے ہوا تھا۔ انہوں نے سو سے زیادہ فلموں کی موسیقی ترتیب دی جن میں پردیسن، آس پاس، پہاڑن، ہڈ حرام، بھولے خان، دیوداس، پیار نہ منے ہار، سیدھا راستہ، خان دے خان پروہنے اور ٹیپو سلطان کے نام سرفہرست ہیں۔ انہیں المیہ گیتوں کی دھنیں بنانے میں کمال حاصل تھا۔ وہ ہمیشہ معیاری اور نئی کمپوزیشنز بناتے تھے جو کہانی کے ماحول، سچویشن اور اداکار یا اداکارہ کی مناسبت سے بنائی جاتی تھی۔ جب فلمی دنیا میں معیاری موسیقی کی پذیرائی نہ رہی تو وہ ریڈیو اور ٹیلی وژن کے پروگراموں میں موسیقی ترتیب دینے لگے۔ پاکستان کے فلمی موسیقار عاشق حسین، اختر حسین اکھیاں کے بڑے بھائی تھے۔ پاکستان کی مشہور گلوکارہ کوثر پروین ان کی اہلیہ تھیں اور پاکستان کی پہلی فلم ’’تیری یاد‘‘ کے موسیقار ماسٹر عنایت علی ناتھ ان کے سسر تھے، یوں مشہور اداکارہ آشا پوسلے اور رانی کرن ان کی خواہران نسبتی ہوتی تھیں۔

UP