> <

صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی۔ ڈاکٹر محمد اسلم فرخی

ڈاکٹر محمد اسلم فرخی اردو کے معروف شاعر اور ادیب، ڈاکٹر محمد اسلم فرخی 23 اکتوبر 1924ء کو لکھنؤ میں پیدا ہوئے۔ قیام پاکستان کے بعد کراچی میں سکونت اختیار کی اور جامعہ کراچی سے ’’محمد حسین آزاد: حیات اور تصانیف‘‘ کے موضوع پر پی ایچ ڈی کی سند حاصل کی۔ خاکوں کے مجموعے گلدستہ احباب،آنگن میں ستارے، لال سبز کبوتروں والی چھتری اور موسم بہار جیسے لوگ شامل ہیں۔ تحقیقی کتب میں محمد حسین آزاد: حیات اور تصانیف، قتیل و غالب، نظام رنگ، فرید و فرد فرید، دبستان نظام، بچوں کے سلطان جی، بچوں کے رنگا رنگ امیر خسرو، فرمایا سلطان جی نے، چاند بی بی اور تذکرہ گلشن گلشن ہمیشہ بہار (تصحیح و تحشیہ) کے نام شامل ہیں۔ 2005ء میں اکادمی ادبیات پاکستان نے خاکوں کے مجموعے لال سبز کبوتروں کی چھتری پر بابائے اردو مولوی عبدالحق ایوارڈ عطا کیا۔ان کے فن کے اعتراف میں حکومت پاکستان نے انھیں 14 اگست 2008 ء کو صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیا تھا۔ ڈاکٹر محمد اسلم فرخی ممتاز افسانہ نگار ڈاکٹر آصف فرخی کے والد ہیں اورکراچی میں قیام پذیر ہیں۔

UP